بھارتی میڈیا کی باتیں سننے کے بعد بھی نوجوت سنگھ سدھونے عمران خان کی حمایت ترک نہ کی ، کپتان کی حمایت میںایسا بیان دے دیا انڈیا میں ہنگامہ پربا ہو گیا

اجمیر (ویب ڈیسک ) بھارتی صوبہ پنجاب کے آرٹ، سیاحت و ثقافت کے وزیر اور سابق کرکٹر نوجوت سنگھ سدھونے امید ظاہر کی ہے کہ ہندستان اور پاکستان کے حالات بہتر ہوں گے۔گزشتہ روز سدھو ایک نجی اسکول کے پروگرام میں شرکت کے دوران صحافیوں سے بات کررہے تھے۔انہوں نے دونوں ملکوں کے رشتوں میں بہتری آنے کی بات کرتے ہوئے اپنے دورہ پاکستان کو درست قدم قرار دیا۔تقریب میں انہوں نے عمران خان کے ساتھ اپنے

22سال پرانے کرکٹ رشتوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ،”میں نے اس شخص کو محنت کرتے ہوئے دیکھا ہے ، وہ دونوں ملکوں کے درمیان امن وامان اور محبت کا پیغام سمیت رشتوں میں بہتری کا راستہ نکالے گا۔“انہوں نے بتایا کہ عمران کی جانب سے امن مذاکرات پر زور نے میری امیدیں اور بڑھا دی ہیں۔سدھو نے کسی انسان کی سوچ کو خیالات سے بدلنے کی بات کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب میں سوچ سے سوچ کی لڑائی مہم چلائی جارہی ہے جس کے ذریعہ اج کا نوجوان مثبت سوچ کے ساتھ کئی بلندیوں کو چھو سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ واجپائی پاکستان گئے تو کارگل کا سانحہ ہوا، نریندر مودی لاہور گئے تو پٹھان کوٹ کا واقعہ ہوگیا، تو اس کا مطلب ہے کہ وہ دونوں بھارت مخالف تھے ؟واضح رہے کہ سدھو کی وزیر اعظم عمران خان کی تقریب حلف برداری میں شرکت کے بعد بھارت میں شدید ردعمل سامنے ایا اور کئی بھارتی شہروں میں ان کے خلاف مظاہرے کیے گئے تھے

اپنا تبصرہ بھیجیں